تم نے رگ رگ میں کوئی قہر ابھارا ہوگا، اردو غزل

تم نے رگ رگ میں کوئی قہر ابھارا ہوگا، اردو غزل

اردو غزل ‏تم نے رگ رگ میں کوئی قہر ابھارا ہوگا ایسے ہی تم نے میرا شہر اجاڑا ہوگا بے وجہ کوئی یہاں چاکِ گریبان کیوں ہو پیار سے تم نے کوئی زہر اتارا ہوگا تم نے جو حال مرا دنیا میں کر ڈالا ہے اب قیامت میں بھی کیا حشر دوبارہ ہوگا اگر آپ شاعری سننا چاہتے ہیں تو نیچے دیے...

read more
ہاتھ خالی ہیں ترے شہر سے جاتے جاتے، اردو غزل

ہاتھ خالی ہیں ترے شہر سے جاتے جاتے، اردو غزل

اردو غزل ہاتھ خالی ہیں ترے شہر سے جاتے جاتے جان ہوتی تو مری جان لٹاتے جاتے اب تو ہر ہاتھ کا پتھر ہمیں پہچانتا ہے عمر گزری ہے ترے شہر میں آتے جاتے اب کے مایوس ہوا یاروں کو رخصت کر کے جا رہے تھے تو کوئی زخم لگاتے جاتے رینگنے کی بھی اجازت نہیں ہم کو ورنہ ہم جدھر جاتے نئے...

read more
پنجابی شاعری، پیر فضل گجراتی غزل شاعری

پنجابی شاعری، پیر فضل گجراتی غزل شاعری

پنجابی شاعری یار مینوں وی خوشی دا مونہہ وکھا تھوڑا جہیا میری حالت زار اتے مسکرا تھوڑا جہیا موت دا تے زندگی دا آ گیا اوہنوں سواد جیہنے چکھیا عشق تیرے دا مزہ تھوڑا جہیا میری غم دی رات، میرا عید دا دن ہوگیا کیتا تیری یاد نے جد آسرا تھوڑا جہیا مولا جیہڑا درد ہونداۓ درد...

read more
درد بھری اردو غزل، غزل شاعری، بہترین اردو شاعری

درد بھری اردو غزل، غزل شاعری، بہترین اردو شاعری

اردو غزل اپنی باتوں میں میرے نام کے حوالے رکھنا مجھ سے دور ہو تو خود کو سنبھالے رکھنا لوگ پوچھیں گے کیوں پریشان ہو تم، کچھ نگاہوں سے کہنا، زبان پہ تالے رکھنا نہ کھونے دینا میرے بیتے لمحوں کو، میری یادوں کو بڑے پیار سے سنبھالے رکھنا تم لوٹ آو گے اتنا یقین ہے مجھ کو،...

read more
اردو غزل، درد بھری غزل شاعری، بیترین غزل

اردو غزل، درد بھری غزل شاعری، بیترین غزل

اردو غزل بے وفا کوئی ستمگر بھی تو ہو سکتا ہے میرا قاتل میرا رہبر بھی تو ہو سکتا ہے سلسلہ وار اگر اشک بہاۓ جائیں یہ جو صحرا ہے سمندر بھی تو ہو سکتا ہے ایک مدت سے تجھے وِرد میں رکھا جس نے وہ مُحبت میں قلندر بھی تو ہو سکتا ہے تیرے کوچے میں جو آیا ہے غلاموں کی طرح اپنی...

read more
اس کو فرصت ہی نہیں وقت نکالے محسن، درد بھری شاعری غزل

اس کو فرصت ہی نہیں وقت نکالے محسن، درد بھری شاعری غزل

غزل اس کو فرصت ہی نہیں کہ وقت نکالے محسن ایسے ہوتے ہیں بھلا چاہنے والے محسن؟ یاد کے دَشت میں پھرتا ہوں میں ننگے پاؤں دیکھ تو آ کے کبھی پاؤں کے چھالے محسن کھو گئی صُبح کی امید، اور اب لگتا ہے ہم نہیں ہوں گے کہ جب ہوں گے اُجالے محسن حاکمِ وقت کہاں، میں کہاں، عدل کہاں...

read more